Sunday, May 14, 2017







مارگٹ میں پاکستانی فورسز کے گاڑی پر بم حملے کی ذمہ داری قبول کرتے ہیں
(مقبوضہ بلوچستان، بی یوسی نیوز) بلوچ قومی فوچ بلوچ لبریشن آرمی کے ترجمان جئیند بلوچ نے کوئٹہ کے قریب مارگٹ میں سیکورٹی فورسز پر ہونے والے بم حملے کی زمہ داری قبول کرلی۔ بی ایل اے کے ترجمان جئیند بلوچ نے نامعلوم مقام سے سیٹلائٹ فون کے زریعے میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ آج بلوچ سرمچاروں نے کوئٹہ کے نواحی علاقے مارگٹ میں پاکستانی فورسز کے گاڑی کو ریموٹ کنٹرول بم کے زریعے نشانہ بنایا جسکے نتیجے میں تین اہلکار ہلاک اور متعدد زخمی ہوگئے۔ ترجمان نے کہا کہ ہماری اسطرح کی کاروائیاں جاری رہیں گے

Saturday, May 13, 2017

BUC Baluchistan News

گوادر حملے کی ذمہ داری قبول کرتے ہیں ۔ بی ایل اے ۔
(مقبوضہ بلوچستان، بی یوسی نیوز)بلوچ قومی فوچ  بلوچ لبریشن آرمی کے ترجمان جئیند بلوچ نے نامعلوم مقام سے سیٹلائٹ فون کے ذریعے میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ آج صبح گوادر کے قریب پشکان میں روڈ بنانے والے  FWO کے دس کارندوں کوفائرنگ کرکے ہلاک کردیا اور گنز کے قریب ایک دوسرے واقعہ میں ریاستی خفیہ ادارے آئی ایس آئی کے اہلکار منظور عرف حاجی چلہ کو فائرنگ کرکے ہلاک کر دیا دونوں واقعات کی ذمہ داری بی ایل اے قبول کرتی ہے اور  بلوچ سرزمین پر سی پیک کے نام سے پاکستانی فوج اور چائنا جس خطرناک منصوبے کو پایہ تکمیل تک پہنچانے کی تگ و دو میں لگے ہوئے ہیں وہ بلوچ قوم کے بقاء سے وابسطہ ہے جو برائے راست بلوچ شناخت وسائل اور جغرافیہ کو فنا سے دوچار کرنے جارہا ہے اور ساتھ ہی ساتھ ہمسایہ اقوام اور پوری دنیا کے امن کو چائنا اور پاکستان کے ناپاک فوجی عزائم کے نظر کرکے اپنے مفادات کے تحفظ کا وسیلہ بنانے جارہے ہیں یہ سازشی منصوبہ بلوچ قوم  کےلئے کسی بھی قیمت پر قابل قبول نہیں بلوچ آزادی پسند قوتیں کئی مرتبہ اس بات کی وضاحت کرچکے ہیں  ترقیاتی منصوبوں اور نا ہی جمہوریت کے نام پر ہم اپنے قوم کے مستقبل کو داو پر لگانے کی اجازت دینگے اور یہ حق کسی کو نہیں پہنچتا کہ وہ بلوچ قوم کے مستقبل کو مزدوری یا ترقیاتی منصوبوں یا جمہوریت یا مذہب کے نام پر داو پر لگائیں۔ اس بات میں کوئی شک  نہیں کہ ریاست پاکستان کے بلوچ سرزمین پرجاری تمام منصوبے استحصالی ہیں جنکا بلوچ قومی مفادات سے ذرا برابر تعلق نہیں لہذا یہ بلوچ قوم کے لئے ناقابل برداشت ہیں ہم عالمی برادری کی توجہ اس طرف دلاتے ہیں کہ وہ جلدازجلد اس خطے کو عدم استحکام سے دوچار کرنے کی پاکستان اور چائنا کی ان مشترکہ سازشی منصوبوں کا جو بلوچ سرزمین پر بلوچ قوم کے منشاء و مرضی کے بغیر بلوچوں کے لاشوں پر بنائی جارہی نوٹس لیں اور اپنا اخلاقی اور انسانی فریضہ ادا کرنے کےلئے آگے آئیں ۔ ہم بلوچ عوام خصوصا بلوچ نوجوانوں کو یہ پیغام دینا چاہتے ہیں کہ وہ دشمن کے فریب میں نہ آئے اور اپنے قوم اور سرزمین کے دفاع میں برسرپیکار آزادی پسند ساتھیوں کا ساتھ دیں دشمن آج بندوق توپ جہاز اور دیگر اقوام کے افواج کے ذریعے ہم پر حملہ ور ہے یہ ہمارا قومی فریضہ ہے کہ ہم ہر قیمت پر دشمن کے آگے دیوار بنیں اور اپنے قوم و وطن کی دفاع کریں اپنے وطن کے دفاع میں پیش پیش بلوچ مسلح نوجوان کا ساتھ دیں انکے صفوں میں شامل ہوکر اپنے قومی غیرت اور ہمت کا ثبوت دیں ۔